گورنر عمران اسماعیل نے سندھ کی عوام کو بڑے ریلیف سے محروم کر دیا

کراچی : گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کورونا ایمرجنسی ریلیف آرڈیننس پر اعتراض اٹھاتے ہوئے اسے سندھ حکومت کو واپس بھیج دیا ہے ۔ گورنر نے اپنے اعتراضات میں کہ ہے کہ بجلی، گیس بل میں کمی اور کٹوتی یا رعایت صوبائی حکومت کا دائرہ اختیارنہیں ہے ، یہ دائرہ اختیار وفاق کا ہے ۔

گورنر ہائوس کے مطابق گورنرسندھ نے ریلیف آرڈیننس پر اپنے تحفظات سے بھی سندھ حکومت کو آگاہ کر دیا ہے ۔ گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کورونا ایمرجنسی ریلیف آرڈیننس پر اعتراضات لگاتے ہوئے ، آرڈیننس کی ذیلی شقوں پر اعتراض کرتے ہوئے کہا ہے کہ بجلی اور گیس بل میں کمی، کٹوتی یا رعایت صوبائی حکومت کا دائرہ اختیار ہی نہیں ہے ۔ یہ دائرہ اختیاروفاق کا ہے ۔ بجلی،گیس کے بل میں کمی یارعایت وفاقی حکومت کا اختیار ہے ۔

مذید پڑھیں : ڈائریکٹر اسکول نے رشوت کے عوض گریڈ 16 کے اساتذہ کو غیر قانونی ترقیاں دے ڈالیں

بجلی، گیس بل میں رعایت کا وفاقی حکومت پہلے ہی فیصلہ کر چکی ہے ۔ عمران اسماعیل نے کہا کہ ہرگزرتے دن کے ساتھ وفاقی حکومت ریلیف کا کام بڑھا رہی ہے، آئین کے تحت بجلی، گیس کے معاملات وفاق کے کنٹرول میں ہیں، وفاق ملک بھر کے عوام بشمول سندھ میں ریلیف فراہم کر رہا ہے ۔ وفاقی حکومت کی ریلیف سرگرمیوں کا دائرہ بڑھایا جا رہا ہے ، حکومت کسی خوف،امتیازی سلوک کے بغیر ریلیف کا کام جاری رکھے گی ۔

انہوں نے کہا کہ آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی آرڈیننس 2002 کے تحت گیس بھی وفاقی معاملہ ہے ۔ یاد رہے سندھ کابینہ نے کچھ روز قبل کورونا وائرس ریلف آرڈیننس کی منظوری دے کر اسے گورنر کے پاس بھیجا تھا ۔ تاہم گورنر کے اس اقدام کے بعد سندھ کے شہریوں کی جانب سے سخت تنقید کی جارہی ہے کہ گورنر سندھ نے اپنی سیاست کے لئے عوام کو ایک ریلیف سے محروم کردیا ہے ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *