ایبٹ آباد پولیس کے 6 کورونا مشتبہ اہلکار قرنطینہ میں نامناسب رویوں کا شکار

ایبٹ آباد الرٹ : ایبٹ آباد پولیس کے 6 کورونا مشتبہ اہلکاروں کو ڈی ایچ کیو اسپتال میں نا مناسب رویئے کا سامنا ہے ۔ نامناسب کھانا فراہم کیا جارہا ہے ۔ ماجد عباسی کی دل دہلا دینے والی ویڈیو وائرل ہو گئی ۔

ایبٹ آباد پولیس کے 6 ملازمین مبینہ طور پر کورونا سے متاثرہو کر ڈی ایچ کیو ہسپتال ایبٹ آباد کے قرنطینہ سنٹر منتقل کر دیئے گئے ہیں ۔ جہاں انہیں نا مناسب کھانا فراہم کیا جا رہا ہے ۔ جب کہ مذکورہ متاثرہ کورونا مریضوں کی نمائندگی کرتے ہوئے ماجد عباسی نامی پولیس اہلکار نے مبینہ ناقص کھانے کی فراہمی پر شدید احتجاج ریکارڈ کروایا ہے ،

مذید پڑھیں : خیبر پختون خوا کے IG ثناءاللہ عباسی خود کرپٹ نکلے

ماجد عباسی نے اپنے ویڈیو پیغام میں ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد اور دیگر متعلقہ انتظامیہ کی توجہ مبذول کراتے ہوئے احتجاجی لہجے میں کہا ہے کہ خدا کا واسطہ ہے کہ ہمیں بھوک سے نہ مارو ۔ ماجد عباسی کی قرنطینہ سینٹر سے وائرل ویڈیو میں انہوں نے بتایا کہ وہ لاک ڈائون کے دوران ناکہ بندیوں پر متواتر ڈیوٹی کرتے رہے ہیں ۔ جہاں سے ہم پانچ سے چھ پولیس اہلکار کورونا وائرس کا شکار ہوئے اورہمیں ڈی ایچ کیو ایبٹ آباد منتقل کیا گیا ہے ۔ جب کہ اٹھارہ انیس گھنٹے گزرنے کے باوجود ہمارے پاس کوئی ڈاکٹر نہیں آیا ہے ۔ اورہمیں سحری میں انتہائی نا مناسب کھانا فراہم کیا گیا ہے ۔

جو ہم کھا بھی نہیں سکتے ۔ جب کہ ہم نے روزہ بھی رکھنا ہے ۔ ماجد عباسی نے ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد اور دیگر متعلقہ حکام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم کون سا ایسا گناہ کر بیٹھے ہیں ۔ جو ہمارے ساتھ ایسا سلوک کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم پیسوں کا کھانا منگوانا چاہتے ہیں ۔ تو بھی ہمیں لا کر نہیں دیا جاتا ۔ ماجد عباسی نے متعلقہ حکام کو خدا کا واسطہ دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں بھوک سے مت مارو ۔ البتہ ہمارے مرنے سے اگر آپ کو فائدہ ہے تو ہم مرنے کے لیئے تیار ہیں ۔ پھر بھی ہمیں اپنی اولادوں اور بچوں کے لیئے زندہ رہنے دو ۔ ہاں اگر اللہ نہ چاہے تو کورونا بھی ہمارا کچھ نہیں بگاڑ سکتا آپ ہمیں بھوک سے مت مارو ہمیں کھانا تو مناسب دو ۔

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *