جامعہ NED نے نئی داخلہ پالیسی کا اعلان کر دیا

تعلیم الرٹ :‌ جامعہ این ای ڈی کا ایک سو بانوے سنڈیکیٹ اجلاس گزشتہ روز جمعرات 23 اپریل کو جامعہ این ای ڈی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر سروش حشمت لودھی کی صدارت میں منعقد ہوا ۔ جس میں گزشتہ اجلاس کی سفارشات کی منظوری سمیت تعلیمی اور انتظامی اُمور کا تفصیلی جائزہ لیا گیا ۔

سنڈیکیٹ اجلاس میں نئی داخلہ پالیسی کی منظوری دی گئی ۔ جس کے تحت میرٹ لسٹ کی تیاری میں پچاس فی صد حصہ ٹیسٹ کے نمبرز کا ہو گا ۔ جب کہ بقیہ پچاس فی صد فرسٹ ائیر کا میرٹ ہو گا ۔ جب کہ طالب علم کا سیکنڈ ایئر میں پاس ہونا اور کم از کم 60 فیصد مارکس حاصل کرنا لازمی ہے ۔ اسی طرح اے لیول کے طالب علموں کے لیے بھی پچاس فی صد ٹیسٹ کے مارکس اور پچاس فی صد او لیول کا میرٹ ہو گا ۔ جب کہ نئی پالیسی کے تحت ضیاء الدین بورڈ کی 18 سیٹیں مختص کی گئی ہیں ۔

مذید پڑھیں : پاکستانی عالم دین مولانا خلیل الرحمن یہودی کیوں بن گیا ؟

جامعہ ترجمان کے مطابق پروفیسر ڈاکٹر مشاہد حسین کو آٹو موٹو انجینئرنگ، پروفیسر ڈاکٹرعلی رضا جعفری کو بائیو میڈیکل انجینئرنگ، پروفیسر ڈاکٹر عدنان قادر کواربن اینڈانفرااسٹکچر انجینئرنگ جب کہ پروفیسر ڈاکٹر مقصود احمد خان کو شعبہ انڈسٹریل مینوفیکچرنگ کے چیئرمین کی حیثیت سے اپائمنٹ کیا گیاسینڈیکیٹ اجلاس میں صاحبزادہ فاروق احمد رفیقی کو پروفیسر آف اماریٹس کر عہدے پر فائز کیا گیا جب کہ دوسری جانب اسپیشل سلیکشن بورڈ فار میریٹوریس پروفیسر کے لیئے دو ناموں پروفیسر ڈاکٹر محمد طفیل اور پروفیسر ڈاکٹر سعد قاضی کی منظوری دی گئی۔

اس اجلاس میں سالانہ کار کردگی رپورٹ اور بجٹ تجاویزسینٹ کی منظوری کے لیئے سفارش کی گئی ۔ فنانس پلاننگ کمیٹی کے لیئے ڈاکٹر رضا علی خان کو مقرر کیا گیا ، جب کہ طارق حسین، ایگزیکٹو ڈائریکٹر /ایچ اوڈی ڈیمسل کنسلٹنٹ پرسن آف ایمننس فار فنانس پلاننگ کمیٹی نامزد کیا گیا ۔ اجلاس میں پرووائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد طفیل، سیکریٹری سنڈیکیٹ او رجسٹرارسید غضنفر حسین،چیئرمین چارٹر انسپکشن اینڈ ایولیشن کمیٹی ڈاکٹر عبدالقدیر خان راجپوت،ایچ ای سی سندھ سے پروفیسر ڈاکٹر اے کیو مغل،یونی ورسیٹز اینڈ بورڈزڈیپارٹمنٹ گورنمنٹ آف سندھ کے سیکریٹری ڈاکٹر محمد ریاض الدین،نمائندہ چیف منسٹر فرحت عادل اورڈپٹی رجسٹرارخالد مخدوم ہاشمی موجود تھے ۔

مذید پڑھیں : مرکزی رویت ہلال کمیٹی نے پشاور کی 13 شہادتیں کیوں تسلیم نہیں کیں ؟‌

جب کہ پروفیسر ڈاکٹر محمد رضا مہدی پرنسپل تھر انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، نمائندہ چیف منسٹر مس ایوا کاؤسجی، پنجوانی فاؤنڈیشن اینڈ ٹرسٹ کی چیئر پرسن مسز نادرہ پنجوانی، نمائندہ چیف منسٹرمسز نائلہ ملک، چیف ایگزیکٹو آفیسر کراچی ٹول ڈائس اینڈ مولڈز سینٹرزمنصور احمد،ڈائریکٹر ایڈیشنل سکریٹری انفارمیشن، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ نیاز احمد لغاری،گورنمنٹ آف سندھ،ڈین فیکلٹی آف آرکیٹکچر اینڈ مینجمنٹ سائنسز پرفیسر ڈاکٹر نعمان احمد، ڈائریکٹر کیو ای سی پروفیسر ڈاکٹر آصف احمد شیخ،چیئرمین ڈیپارٹمنٹ الیکٹرونک انجینئرنگ پروفیسر ڈاکٹر محمد عثمان علی شاہ، شعبہ مکینکل کے پروفیسرڈاکٹر مبشر علی صدیقی، چیئرمین شعبہ اکنامکس اینڈمینجمنٹ سائنسز،کنٹرولرایگزامینیشن اسٹنٹ پروفیسرصفی احمد ذکائی، ڈائریکٹر آئی ٹی محمد اسد عارفین نے آن لائن شرکت کی

Comments: 0

Your email address will not be published. Required fields are marked with *